Aaj TV News

BR100 5,093 Decreased By ▼ -3 (-0.06%)
BR30 25,710 Decreased By ▼ -45 (-0.17%)
KSE100 47,312 Decreased By ▼ -6 (-0.01%)
KSE30 18,963 Decreased By ▼ -11 (-0.06%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,020,324 4,497
DEATHS 23,209 76
Sindh 374,434 Cases
Punjab 354,904 Cases
Balochistan 30,019 Cases
Islamabad 86,602 Cases
KP 142,799 Cases

اپوزیشن کے شور شرابے میں آئندہ مالی سال کے لئے پنجاب کا بجٹ پیش کردیا گیا۔

پنجاب بجٹ کا حجم چھبیس سو تریپن ارب روپے ہے، سرکاری تنخواہ اور پینشن میں دس فیصد اضافے کی تجویز ہے، کم از کم ماہانہ اجرت بیس ہزار روپے کردی گئی۔

ترقیاتی پروگرام کے لیے پانچ سو ساٹھ ارب مختص، صحت کے لئے تین سو انہتر ارب اور تعلیم پر چار سو بیالیس ارب روپے خرچ کئے جائیں گے، محصولات کے لیے چار سو پانچ ارب کا ہدف مقرر کردیا گیا۔

پنجاب کے لئے مالی سال دوہزار اکیس بائیس کا بجٹ پیش کردیا گیا۔

صوبائی وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت نے بجٹ پیش کیا۔ صوبے کے آئندہ مالی سال کے بجٹ کا مجموعی حجم چھبیس کھرب ترپن ارب روپے ہے۔

صوبائی وزیر خزانہ نے اسمبلی کو بتایا کہ نئے سال سے سرکاری ملازمین اور پنشن میں دس فیصد اضافہ اور کم از کم اجرت بیس ہزار روپے ماہانہ کی جارہی ہے۔

پنجاب میں آئندہ مالی سال تعلیم پر چار سو بیالیس ارب روپے اور صحت پر تین سو انہتر ارب روپے خرچ کئے جائیں گے۔

صوبے کے ترقیاتی بجٹ کے لئے پانچ سو ساٹھ ارب روپے رکھنے کی تجویز ہے۔