Aaj News

پنجاب اسمبلی کی تحلیل روکنے کیلئےاعتماد کے ووٹ کا آپشن استعمال کرنے پرغور

اعتماد کے ووٹ میں ناکامی پر وزیراعلیٰ کا انتخاب دوبارہ ہوگا
اپ ڈیٹ 01 دسمبر 2022 02:04pm
<p>تصویر: بزنس ریکارڈر</p>

تصویر: بزنس ریکارڈر

اپوزیشن نے پنجاب حکومت کی تحلیل روکنے کے لیےسرگرم ہوتے ہوئےاعتماد کے ووٹ کا آپشن استعمال کرنے پرغورشروع کردیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اعتماد کے ووٹ کیلئے پنجاب حکومت کو اراکین پورے کرنا ہوں گے جبکہ عدم اعتمادکی صورت میں اپوزیشن کواراکین پورے کرنا ہوں گے۔

حقائق کا جائزہ لیا جائے توعدم اعتماد کی صورت میں اپوزیشن اراکین پورے نہیں کرپائے گی کیونکہ اپوزیشن کے پاس درکار 186 کے بجائے 180 ارکان ہیں اور ایسے میں اپوزیشن کو ناکامی کاسامناکرناپڑےگا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسی وجہ سے اپوزیشن نے گورنرکے ذریعےاعتماد کا ووٹ لینےکا آپشن اپنانےکا فیصلہ کیا ہے۔

گورنر پنجاب، وزیراعلیٰ کو اعتماد کا ووٹ لینے کا کہیں گے ، اورتحریک عدم اعتماد جمع کرائے جانے پر6 حکومتی اراکین کے غیرحاضر ہونے کی صورت میں پرویز الہیٰ وزیر اعلیٰ نہیں رہیں گے۔

وزیر اعلیٰ نہ رہنے کی صورت میں پرویز الہیٰ گورنر کو اسمبلی تحلیل کرنے کا نہیں کہہ سکیں گے اوراعتماد کے ووٹ میں ناکامی کے بعد صوبے کے وزیراعلیٰ کا انتخاب دوبارہ ہوگا۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے 26 نومبرکوراولپنڈی جلسہ میں اعلان کیا تھا کہ وہ پنجاب اور خیرپختونخوا اسمبلیاں تحلیل کردیں گے۔

pti

imran khan

Chaudhry Pervaiz Elahi

Hamza Shehbaz

Assembly Dissolve

Punjab Assembly dissolve

KP Assembly dissolve

POLITICS DEC01 2022

Comments are closed on this story.

Jaidad Hussain Dec 01, 2022 01:49pm
اور اگر عدم اعتماد میں 7 ممبر پرویز الٰہی کو ووٹ نہ دے تو اس صورت میں اس کی اکثریت ختم ہو جائے گی پھر جس کی زیادہ اکثریت ہوگی وہی وزیر اعلیٰ پنجاب بناے گا
thumb_up Recommend
مقبول ترین