Aaj News

شاہد خاقان نے صدر مملکت کی مذاکرات کی تجویز کی حمایت کردی

تجویز صرف الفاظ کی حد تک محدود نہیں رہنی چاہیے، شاہد خاقان عباسی
اپ ڈیٹ 18 اکتوبر 2022 09:58pm

Imran Khan Vs Establishment - naya mahaaz?| Interview with Shahid Khaqan Abbasi | Faisla Aap Ka

سابق وزیراعظم اور رہنما مسلم لیگ (ن) شاہد خاقان عباسی نے صدر مملکت کی جانب سے انتخابات اور معیشت پر مذاکرات کی تجویز کی حمایت کردی۔

آج نیوز کے پروگرام ’فیصلہ آپ کا‘ میں گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آرمی چیف کی تعیناتی وزیراعظم کا اختیار ہے جسے متنازع نہیں بنانا چاہیے، عمران خان اس ادارے کو بھی سیاست کی نذر کرنا چاہتے ہیں جو نقصان دہ بات ہے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آرمی چیف کی توسیع کا قانون تبدیل کرناہو گا، گزشتہ قانون سازی سے نظام میں ابہام آیا ہے، توسیع آرمی چیف کا حق نہیں، یہ صرف غیر معمولی حالات میں دی جا سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے بغیر مشاورت کے آرمی چیف کی توسیع کی تھی، وہ جو کرکے گئے آج ہم بھگت رہے ہیں، قانون بنانا ہو گا کہ توسیع نہیں ہوگی، البتہ غیر معمولی حالات میں توسیع کرنا صرف پارلیمان کا اختیار ہوگا۔

سابق وزیراعظم نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی تجویز کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ تمام جماعتوں کو ایک ساتھ بیٹھ کر ملکی معاملات پر بحث کرنی چاہیے کہ کس طرح ملک کو مشکل حالات سے نکالا جائے، آج پاکستان کے بہت مشکل حالات ہیں۔

لیگی رہنما نے کہا کہ صدر کی آئینی ذمہ داری ہے، وہ ریاست کے سب سے بڑے عہدیدار ہیں، تجویز صرف الفاظ کی حد تک محدود نہیں رہنی چاہیے بلکہ انہیں سب کو ایک جگہ بلا کر ملک کے معاشی مسائل پر گفتگو کرنی چاہیے۔

COAS

economic crisis

imran khan

faisla aap ka

President Arif Alvi

Army chief appointment

politics Oct 18

Comments are closed on this story.