Aaj News

جیو ٹی وی کو لندن میں قانونی نوٹس بھجوادیا، عمران خان

توشہ خانے کے تحائف سے متعلق دعووں پرقانونی کارروائی کا آغاز
شائع 06 دسمبر 2022 09:47am

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی ہدایت پر توشہ خانے کے تحائف سے متعلق دعووں کے جواب میں پاکستان کے نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے خلاف لندن میں قانونی کارروائی کا آغاز کردیا گیا۔

یہ اطلاع دینے والے عمران خان نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ، “میری ہدایات پر لندن میں جیو ٹی وی لمیٹیڈ کو قانونی نوٹس بھجوا دیا گیا ہے۔ میرےوکلاء نےیہ نوٹس ’پری ایکشن پروٹوکول فار میڈیا اینڈ کمیونیکیشن کلیمز‘ کےتحت بھیجاہے۔’

عمران خان کے مطابق دعویٰ کا باضابطہ خط آج لندن میں جیو ٹی وی لمیٹڈ کو بھیج دیا گیا ہے اوران کے پاس جواب دینے کے لیے 14 روزکی مہلت ہے۔

پس منظر

15 نومبر کو جیو ٹی وی کے پروگرام ’آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ‘ میں پاکستانی نژاد اماراتی بزنس مین عمرفاروق نے عمران خان کی جانب سے بیچے گئے تحائف کا خریدار ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے بتایا تھا کہ ان کی سابق وزیراعظم کے سابق مشیراحتساب شہزاد اکبر سے ملاقات رہتی تھی جنہوں نے کال کرکے منفرد گھڑی فروخت کے لیے پیش کی۔

عمرفاروق کے مطابق ان کی جانب سے حامی بھرنے کے بعد بشریٰ بی بی کی دوست فرح گوگی یہ تحفہ لیکردبئی پہنچیں، گھڑی کی تصدیق کیلئے گراف کی دکان پرگیا جہاں دکان والے نے بتایا کہ قیمتی گھڑی سیٹ کی قیمت 10 سے 15 ملین ڈالرز ہے کیونکہ یہ دنیا میں واحد ہے۔پاکستانی بزنس مین نے یہ گھڑی 2 ملین ڈالرز میں خریدی۔

عمران خان نے اس حوالے سے دیے گئے ردعمل میں اگلے روز ٹوئٹرپراپنے پیغام میں لکھا تھا، “ بس بہت ہوگیا“۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے دعویٰ کیا تھا کہ جیو اور شاہ زیب خانزادہ نے ہینڈلرزکے تعاون سے ایک جانے پہچانے فراڈیے اور بین الاقوامی مطلوب مجرم کی طرف سے تیار کی گئی بے بنیاد کہانی کی بنیاد پرمجھ پربہتان لگایا۔

انہوں نے 16 نومبر کو کی جانے والی ٹویٹ میں جیو، شاہ زیب خانزادہ اور گھڑی خریدنے کا دعویٰ کرنے والے پاکستانی نژاد اماراتی بزنس مین عمر فاروق کے خلاف قانونی کارروائی کا عندیہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ وکلاء سے بات کرلی ہے۔

عمران خان نے یہ بھی کہا تھا کہ وہ نہ صرف پاکستان بلکہ برطانیہ اورمتحدہ عرب امارات میں بھی مقدمہ چلانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

##عمران کے بیان پر شاہ زیب خانزادہ کا ردعمل

عمران خان کی جانب سے دیے گئے بیان پر شاہزیب خانزادہ نے کہا تھا کہ وہ جس عدالت میں جانا چاہیں جائیں ہم سامنا کریں گے۔

شاہزیب خانزادہ کے مطابق۔ ”ہم یہ اسٹوری پوری تحقیق اور محنت کے بعد سامنے لائے ہیں اور ہم اپنے مؤقف پر قائم ہیں، دعویٰ دائر کرنا عمران خان کا حق ہے، عمران خان جہاں چاہیں ہمیں بلائیں ہم ان کا سامنا کریں گے لیکن ہم یہ ضرور چاہیں گے کہ عمران خان پر جو الزامات لگ رہے ہیں وہ ان کا جواب ضرور دیں۔“

ان کا کہنا تھا کہ ابھی تک الزام عمران خان پر نہیں فرح گوگی اور شہزاد اکبر پر لگا تھا، عمران خان یقینی بناتے ہیں کہ جب بھی الزام فرح گوگی پر لگے تو وہ خود ان کا دفاع کرنے آجاتے ہیں۔ عمران خان اس کا نام بتانے سے کترا رہے ہیں جسے گھڑی بیچی، قوم کو اس کا نام بتا دیں، خان صاحب نے روایت بنالی ہے کہ آپ مجھ سے سوال کیوں پوچھتے ہیں، سوال پوچھنا ہماراحق ہے، جس صحافی نے یہ اسکینڈل کور کیا اس کے ساتھ کیا کیا ہوا وہ اپنی کہانی بار بار بتا رہا ہے۔

pti

imran khan

tosha khana case

GEO

Comments are closed on this story.

مقبول ترین