Aaj TV News

BR100 4,765 Increased By ▲ 48 (1.03%)
BR30 20,805 Decreased By ▼ -35 (-0.17%)
KSE100 45,712 Increased By ▲ 212 (0.47%)
KSE30 17,941 Increased By ▲ 116 (0.65%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,266,826 622
DEATHS 28,328 16
Sindh 466,750 Cases
Punjab 438,433 Cases
Balochistan 33,149 Cases
Islamabad 106,571 Cases
KP 177,132 Cases

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئیر رہنما اور سابق گورنر سندھ محمد زبیر "ویڈیو لیک اسکینڈل" کا شکار ہوگئے ہیں۔

نامعلوم خاتون کے ساتھ جنسی حرکتوں میں ملوث ہونے کی فوٹیج وائرل ہونے کے بعد سابق گورنر سندھ نے اسے "سیاست میں نیا نچلا درجہ" قرار دیتے ہوئے واضح طور پر انکار کیا، اور دعویٰ کیا کہ ویڈیو "جعلی اور ڈاکٹرڈ" ہے۔

زبیر نے ٹویٹر پر لکھا ، 'جو بھی اس کے پیچھے ہے اس نے انتہائی ناقص اور شرمناک حرکت کی ہے۔ میں نے ایمانداری ، دیانت اور عزم کے ساتھ اپنے ملک کی خدمت کی ہے۔ پاکستان کی بہتری کے لیے آواز بلند کرتا رہوں گا۔'

قبل ازیں، موبائل فوٹیج جس میں مبینہ طور پر مسلم لیگ (ن) کے رہنما کو ایک بیڈروم میں ایک عورت کے ساتھ دکھایا گیا تھا، سوشل میڈیا پر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور ٹوئٹر پر #ZubairUmar پاکستانی ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

نیٹیزینز شدت سے بحث میں مصروف ہیں کہ کیا یہ ویڈیو اصلی ہے اور اگر ہے تو ، فوٹیج کیسے لیک ہوئی۔

محمد زبیر کی ویڈیو لیک ہونے کے بعد سوشل میڈیا پر عوام کی جانب سے طنز اور میمز کا طوفان آگیا ہے۔

واضح رہے کہ ملک کے کئی سیاست دان "ویڈیو لیک اسکینڈل" کا شکار ہوئے ہیں۔

رواں سال کے آغاز میں وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان سرخیوں میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئی تھیں، جب ان کی پیپلز پارٹی کے ایم این اے قادر خان مندوخیل کے ساتھ ہاتھا پائی کی فوٹیج سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی۔