Aaj TV News

BR100 4,671 Increased By ▲ 6 (0.13%)
BR30 18,834 Increased By ▲ 160 (0.86%)
KSE100 45,369 Increased By ▲ 297 (0.66%)
KSE30 17,576 Increased By ▲ 146 (0.84%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,285,631 377
DEATHS 28,745 8
Sindh 476,017 Cases
Punjab 443,240 Cases
Balochistan 33,488 Cases
Islamabad 107,765 Cases
KP 180,146 Cases

اسلام آباد: چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے کہا ہے کہ سستا اور فوری انصاف ہر شہری کا بنیادی حق ہے،کسی بھی شہری کو انصاف سے محروم نہیں ہونے دیں گے۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے مشکل سے آزادی حاصل کی تھی، سستا اور فوری انصاف ہرشہری کا بنیادی حق ہے اس لے ڈسٹرکٹ کورٹس کا قیام انتہائی اہم تھا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ جب سچی گواہی ناپید ہوجائے تو انصاف کی فراہمی میں مشکل پیش آتی ہے جبکہ قانون کی بالادستی ہو گی تو کمزور طبقوں کو انصاف فراہم ہو سکے گا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزیدکہا کہ ضلعی عدالتوں کے بغیر ججز اور وکلا کو کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا تاہم اب کسی بھی شہری کو سستے اور فوری انصاف سے محروم نہیں ہونے دیں گے۔

جسٹس اطہر من اللہ کا کہنا تھا کہ سماجی اور معاشرتی اخلاقی اقدار کے بغیر عدلیہ کا نظام نہیں چل سکتا جبکہ جھوٹی گواہی اور گناہ دیکھ کر منہ پھیر لینا انصاف کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہے۔

چیف جسٹس جسٹس اطہر من اللہ نے مزیدکہا کہ عدالتی نظام پر عوام کا اعتماد نہ ہونا آمرانہ نظام کی نشاندہی کرتا ہے، نظام عدل کے اسٹیک ہولڈرز عوام کو سستے اور فوری انصاف کی فراہمی یقینی بنائیں گے، 60 سال بعد کسی نے سائلین کے بارے میں سوچا ہے ہمیں بھی انصاف کی فراہمی میں ساتھ کھڑا پائیں گے۔