Aaj TV News

BR100 4,671 Increased By ▲ 6 (0.13%)
BR30 18,834 Increased By ▲ 160 (0.86%)
KSE100 45,369 Increased By ▲ 297 (0.66%)
KSE30 17,576 Increased By ▲ 146 (0.84%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,285,631 377
DEATHS 28,745 8
Sindh 476,017 Cases
Punjab 443,240 Cases
Balochistan 33,488 Cases
Islamabad 107,765 Cases
KP 180,146 Cases

وزیراعظم عمران خان نے ملک بھر میں انٹرنیٹ ڈیٹا پر فی جی بی پانچ روپے ٹیکس لگانے کی تجویز کو مسترد کر دیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر آگاہ کرتے ہوئے لکھا، 'ایک تجویز دی گئی کہ انٹرنیٹ ڈیٹا پر فی جی بی پانچ روپے ٹیکس لگایا جائے۔'

انہوں نے اپنے ٹویٹ میں بتایا کہ 'وزیراعظم صاحب اور کابینہ نے اسے منظور نہیں کیا۔ وزیراعظم چاہتے ہیں کہ انٹرنیٹ تک رسائی ہر شخص کو ہونی چاہئیے اس لئے انٹرنیٹ پر کوئی اضافی ٹیکس نہیں لگایا جائے گا۔ تاکہ یہ عام آدمی کی قوت خرید میں رہے۔'

ٹوئٹر/شہباز گل

واضح رہے کہ وزیر خزانہ شوکت ترین نے بجٹ تقریر میں کہا تھا کہ موبائل سروسز پر موجودہ ود ہولڈنگ ٹیکس 12.5 فیصد سے کم کرکے 10 فیصد کردیا جائے گا اور کچھ عرصے بعد 8 فیصد کیا جائے گا۔ ساتھ ہی آئندہ بجٹ میں موبائل فون کی درآمد پر ریگولیٹری ڈیوٹی بڑھائی جارہی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ 3 منٹ سے زائد جاری رہنے والی موبائل فون کالز، انٹرنیٹ ڈیٹا کے استعمال، ایس ایم ایس پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی لگائی جارہی ہے جس سے آبادی کے بڑے حصے پر ٹیکس نافذ ہوگا۔

تقریر کے اختتام پر وزیر اعظم عمران خان نے وزیر خزانہ کو ان کی نشست پر جا کر شاباشی بھی دی۔