Aaj TV News

BR100 4,519 Increased By ▲ 22 (0.49%)
BR30 18,277 Decreased By ▼ -62 (-0.34%)
KSE100 44,114 Increased By ▲ 178 (0.41%)
KSE30 17,034 Increased By ▲ 95 (0.56%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,284,189 303
DEATHS 28,709 5
Sindh 475,248 Cases
Punjab 442,950 Cases
Balochistan 33,479 Cases
Islamabad 107,626 Cases
KP 179,928 Cases

انڈونیشیا کے سمندر میں ڈرلنگ کرنے والی جرمن ساختہ آبدوز عملے کے 53 ارکان سمیت لاپتہ ہوگئی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمنی کی آبدوز ’’کے آر آئی نانگگلہ 402‘‘ انڈونیشیا کے جزیرے بالی کے سمندر میں آبی گولوں کا استعمال کرتے ہوئے ڈرلنگ کر رہی تھی تاہم آبدوز کے عملے سے رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔ آبدوز میں 53 افراد موجود ہیں۔

انڈونیشیا کی بحریہ نے آبدوز کے لاپتہ ہونے پر تلاش کا کام شروع کردیا ہے جس کے لیے آسٹریلیا اور سنگاپور سے بھی مدد لی جا رہی ہے۔ آبدوز کی تلاش کا کام بالی سے 60 میل کی دوری پر جاری ہے۔

انڈونیشیا کی کابینہ کے سکریٹریٹ کی ویب سائٹ کے مطابق 1395 ٹن کے آر آئی ننگگالہ 402 کو جرمنی میں 1978 میں تعمیر کیا گیا تھا۔ یہ آبدوز دو سال جنوبی کوریا میں رہی جہاں اس میں ترمیم کی گئی اور دوبارہ استعمال کے لیے 2012 میں تیار کیا گیا تھا۔

ماضی میں انڈونیشیا اپنے وسیع و عریض جزیرے کے پانیوں پر گشت کرنے کے لیے سوویت یونین سے خریدی گئی 12 آبدوزوں کا بیڑا استعمال کیا کرتا تھا تاہم اب صرف 5 آبدوزیں ہیں جن میں سے 2 جرمنی اور 3 جنوبی کوریا کے ہیں۔

واضح رہے کہ انڈونیشیا دفاعی صلاحیتوں کو اپ گریڈ کرنے کی کوشش کر رہا ہے لیکن اب بھی کافی کام کرنا باقی ہے، یہی وجہ ہے کہ حالیہ برسوں میں فضائی حادثوں میں زیادہ تر نہایت پرانے جہاز شکار ہوئے۔