Aaj TV News

BR100 4,979 Decreased By ▼ -47 (-0.94%)
BR30 24,460 Decreased By ▼ -313 (-1.26%)
KSE100 46,636 Decreased By ▼ -284 (-0.61%)
KSE30 18,480 Decreased By ▼ -178 (-0.95%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,218,749 2,928
DEATHS 27,072 68
Sindh 448,658 Cases
Punjab 419,423 Cases
Balochistan 32,707 Cases
Islamabad 103,720 Cases
KP 170,391 Cases

دنیا میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کی وجہ سے رواں سال رمضان بھی مختلف ہے۔

سعودی میگزین السیدتی نیٹ میں غذائی ماہرین کی معلومات کی بنیاد پر شائع ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق ایسی صورتحال میں دائمی بیماری میں مبتلا، خاص طور پر ذیابیطس کے مریضوں کو صحت مند رہنے کے لیے روزہ رکھنے سے پہلے معالج سے مشورہ لینا چاہیے۔

٭ رمضان میں ذیابیطس کو قابو میں رکھنا

ماہرین کا کہنا ہے کہ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے ضروری ہے کہ ماہ رمضان سے قبل ڈاکٹر سے ملیں، صحت کے متعلق معلومات لیں، خوراک کو ایڈجسٹ کریں اور ادویات باقاعدگی سے استعمال کریں۔

عام طور پر طبی ماہرین تجویز کرتے ہیں کہ ذیابیطس کے مریض دن میں کئی بار روزہ رکھنے کے دوران اپنا شوگر لیول چیک کریں۔ شوگر کی کمی سے بچنے کے لیے مریض کو اس کی علامات کا بھی پتہ ہونا چاہیے۔ وہ سر درد، دھڑکن میں کمی و بیشی، گھبراہٹ، بھوک اور پسینہ کا آنا ہیں۔

ذیابیطس کے مریض کی جب شوگر 70 ملی گرام سے نیچے آ جائے تو اس صورت میں روزہ توڑنا چاہیے کیونکہ یہ ایک خطرناک معاملہ ہے اس کی وجہ سے مریض بے ہوش ہو سکتا ہے، گاڑی چلاتے ہوئے ایکسیڈنٹ کا بھی خطرہ رہتا ہے۔

٭ ذیابیطس کے مریضوں کو مٹھائیاں نہیں کھانی چاہیے

شوگر کے مریض کو رات کے وقت مٹھائیاں، بہت زیادہ کیلوریز والی خوراک، رس اور کھجور کھانے میں محتاط رہنا چاہیے ان کی وجہ سے شوگر لیول میں اضافہ ہوتا ہے۔

٭ انسولین

ایسی حالت میں جب ذیابیطس کے مریض انسولین استعمال کرتا ہے تو اسے 20-30 فیصد تک خوراکیں کم کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے، بشرطیکہ تیزی سے اثر کرنے والی انسولین افطاری کے وقت اور سحری کے وقت لی جائے۔

٭ قوت مدافعت کی کمی اور کورونا

ماہرین کے مطابق اس حقیقت کی طرف توجہ دلانے کی ضرورت ہے کہ کورونا وائرس پھیل رہا اور چونکہ ذیابیطس کے مریض کا مدافعتی نظام کمزور ہوتا ہے لہذا ان کو گھر میں ہی رہنا ضروری ہے اور ہاتھوں کو اچھی طرح سے دھونا، ماسک پہننا، بھیڑ سے بچنا، شوگر پر قابو رکھنا، پانی پینا اور نفسیاتی دباؤ سے بچنا ضروری ہے۔