Aaj TV News

BR100 4,671 Increased By ▲ 6 (0.13%)
BR30 18,834 Increased By ▲ 160 (0.86%)
KSE100 45,369 Increased By ▲ 297 (0.66%)
KSE30 17,576 Increased By ▲ 146 (0.84%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,285,631 377
DEATHS 28,745 8
Sindh 476,017 Cases
Punjab 443,240 Cases
Balochistan 33,488 Cases
Islamabad 107,765 Cases
KP 180,146 Cases

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اورروسی وزیر خارجہ کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں باہمی دلچپسی اور دفاعی و سیکیورٹی تعاون پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

آئی ایس پی آرکےمطابق پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے روسی وزیرخارجہ نے جی ایچ کیو راولپنڈی کا دورہ کیا اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی۔ملاقات میں باہمی دلچپسی اور دفاعی و سیکیورٹی تعاون سمیت علاقائی سیکیورٹی، بالخصوص افغان مفاہمتی عمل تبادلہ خیال کیا گیا۔

روسی وزیرخارجہ نے دہشتگردی کےخلاف جنگ میں پاکستان کی کوششوں کو سراہا اورعلاقائی امن واستحکام کےلئے پاکستان کے کردار کی تعریف کی جبکہ روسی وزیرخارجہ نے افغان مفاہمتی عمل کےلئے پاکستان کی سنجیدہ کوششوں کو بھی سراہا۔

روسی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاک روس تعلقات مثبت سمت میں گامزن ہیں۔مستقبل میں پاک روس تعلقات مختلف شعبوں میں وسعت اختیار کرتے رہیں گے۔

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان روس کے ساتھ تعلقات کوخصوصی اہمیت دیتا ہے۔پاکستان روس کے ساتھ باہمی فوجی تعاون کو وسعت دینے کے خواہاں ہے۔

آرمی چیف نےکہا کہ پاکستان افغانستان میں دیر پا امن اور استحکام کےلئےتمام اقدامات کی حمایت کرتا ہے۔افغانستان میں دیرپا امن و ستحکام سےخطے کو فائدہ ہوگا۔

آرمی چیف نے واضح کیا کہ ہمارے کسی ملک کےخلاف جارحانہ عزائم نہیں ہیں۔پاکستان علاقائی تعاون کےلئے کوشاں ہے۔پاکستان باہمی وقار اور مشترکہ ترقی کے فریم ورک کےلئے پرعزم ہے۔