Aaj TV News

BR100 4,630 Decreased By ▼ -41 (-0.87%)
BR30 18,575 Decreased By ▼ -259 (-1.38%)
KSE100 45,010 Decreased By ▼ -359 (-0.79%)
KSE30 17,404 Decreased By ▼ -171 (-0.98%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,285,631 377
DEATHS 28,745 8
Sindh 476,017 Cases
Punjab 443,240 Cases
Balochistan 33,488 Cases
Islamabad 107,765 Cases
KP 180,146 Cases

اسلام آباد:آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہوسکتا ،ماضی کو بھلا کر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے،نیشنل سیکیورٹی صرف اندرونی اور بیرونی خطرات کا مقابلہ نہیں بلکہ نیشنل سیکیورٹی ڈائیلاگ وقت کی اہم ضرورت ہے،موجودہ حالات میں پاکستان کو کئی چیلنجز کا سامنا ہے،نیشنل سیکیورٹی کا مقصد اندرونی و بیرونی چیلنجز کا مقابلہ کرنا ہے۔

اسلام آباد نیشنل سیکیورٹی ڈائیلاگ کی تقریب سے خطاب کرتےہوئے آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے کہا کہ نیشنل سیکیورٹی کے اہداف بہت وسیع ہیں،دنیاکوورلڈوار،کولڈوارکاسامنارہا،نیشنل سیکیورٹی ڈائیلاگ وقت کی اہم ضرورت ہے،مضبوط معیشت کےبغیرریاست مضبوط نہیں ہوسکتی۔

آرمی چیف نے کہا کہ آج دنیاکومختلف طرزکی دہشتگردی کاسامناہے،نیشنل سیکیورٹی کامقصداندرونی اور بیرونی چیلنجزکامقابلہ کرناہے،موجودہ حالات میں پاکستان کو کئی چیلنجزکا سامناہے،ہم نے ماضی کے تجربات سےبہت کچھ سیکھا ہے۔

جنرل قمر جاوید باجوہ نے مزید کہا کہ افغانستان میں قیام امن کیلئے پاکستان اہم کردار ادا کررہا ہے،پاک بھارت تنازعات کی بنیادی وجہ مسئلہ کشمیرہے،مسئلہ کشمیرخطےکےتمام مسائل کی جڑ ہے،مسئلہ کشمیرکے حل کےبغیرخطےمیں امن قائم نہیں ہوسکتا،ماضی کو بھلا کر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔

پاک فوج کے سربراہ کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی پراخراجات بڑھانےسےانسانی ترقی کی قربانی دیناپڑتی ہے ،جارح پڑوسی کے باوجود پاکستان ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل نہیں ہوا، ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل ہونے کے بجائے پاکستان نے دفاعی اخراجات میں کمی کی،پاکستان خطے میں خطرات کے باوجود دفاع پر کم خرچ کرتا ہے۔