Aaj TV News

BR100 4,355 Decreased By ▼ -5 (-0.12%)
BR30 22,224 Increased By ▲ 12 (0.06%)
KSE100 41,876 Increased By ▲ 47 (0.11%)
KSE30 17,674 Decreased By ▼ -23 (-0.13%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 307,418 532
DEATHS 6,432 8

چین اور ہندوستان میں‌ صدیوں‌ سے مختلف جسمانی تکالیف اور امراض کے علاج میں بابچی (Psoralea corylifolia) کا استعمال کیا جاتا رہا ہے۔

یہ پودا ہندوستان، سری لنکا میں پتھریلی زمین، کھیت کی باڑوں اور کھنڈرات میں پایا جاتا ہے اور امریکا میں بھی پیدا ہوتا ہے۔

بابچی کو باکوچی بھی کہا جاتا ہے۔ اس کا پودا 3 فٹ یا اس سے زیادہ اونچا ہوسکتا ہے۔ اس کے پتّے سبز رنگ کے اور چوڑے ہوتے ہیں اور ہر پتّے کی جڑ میں شہتوت سے ملتا جلتا ایک خوشہ ہوتا ہے۔

اس میں چھوٹے چھوٹے سفید اور گلابی رنگ کے پھول ہوتے ہیں۔ اس کے بیج بادامی رنگ کے سیاہی مائل ہوتے ہیں۔ یہ نہایت سخت ہوتے ہیں۔ ان کا ذائقہ تلخ ہوتا ہے۔ ان پر ایک چپکنے والی رطوبت ہوتی ہے اور یہ بیج ہی دوا کے طور پر استعمال ہوتے ہیں۔

بابچی کے بیجوں کا سفوف برص کی بیماری کے علاج میں مفید بتایا جاتا ہے۔ اس کے بیج سانپ، بچھو کے کاٹنے اور جلدی بیماریوں کے علاج میں‌ استعمال کیے جاتے ہیں۔

حکیم اسے خون صاف کرنے، معدہ کی درستی اور طاقت، پیٹ کے کیڑوں کے خاتمے اور بلغم دور کرنے کے لیے مفید بتاتے ہیں۔